آسکر وائلڈ

وکی اقتباسات سے
Jump to navigation Jump to search
جو چیز ہم پہنتے ہیں وہ فیشن اور جو دوسرے پہنتے ہیں وہ فیشن سے باہر ہوتا ہے

آسکر وائلڈ (16 اکتوبر 1854 – 30 نومبر 1900) اک آئرش مصنف تھا۔

اقتباسات[ترمیم]

  • بے وقوفی کے علاوہ اور کوئی گناہ نہیں۔
  • اگرچہ ہم سب گٹر میں ہیں لیکن ہم میں سے بعض افراد ستارے دیکھ رہے ہیں۔
  • ہر کوئی اپنی غلطی کوتجربے کا نام دیتا ہے۔
  • اس دنیا میں دو ہی ٹریجیڈیاں ہیں، ایک اس چیز کا نام یاد کرنا جس کی آپ کو ضرورت ہو اور دوسرا اسے تلاش کر لینا۔
  • میں ہر وقت خود کو حیران کرتا رہتا ہوں اور یہی وجہ زندگی کو زندہ رہنے کے قابل بناتی ہے۔
  • خالص اور سادہ سچ شاید ہی کبھی خالص ہو لیکن سادہ پھر بھی نہیں ہوتا۔
  • سر رابرٹ آپ اتنے امیر بھی نہیں کہ اپنا ماضی خرید کر لا سکیں۔ کوئی بھی اتنا امیر نہیں۔
  • جلد یا بدیر ہمیں اپنے اعمال کی جوابدہی کرنی ہوگی۔
  • جو اپنے لئے نہیں سوچتا وہ کبھی سوچتا ہی نہیں۔
  • خودغرضی اپنی مرضی سے جینے کا نام نہیں بلکہ دوسروں کو اپنی مرضی کے مطابق جینے دینا ہے۔
  • صرف اچھے سوالات کے ہی اچھے جوابات ہوتے ہیں۔
  • عورت کی زندگی جذبات کے موڑ گھومتی رہتی ہے۔ مرد کی زندگی عقل کے گرد۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

ویکیپیڈیا میں اس مضمون کے لیے رجوع کریں آسکر وائلڈ.

حوالہ جات[ترمیم]