حوزے سارا ماگو

وکی اقتباسات سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

حوزے سارا ماگو ایک پرتگالی ادیب، جن کو نوبل انعام ملا۔ ان کا ناول اندھے لوگ ان کی وجہ شہرت ہے۔

اقتباسات[ترمیم]

  • بچپن میں پہلی بار گیس کا غبارہ ہاتھ میں تھامے ایک سٹرک پر دوڑتا چلا جا رہا تھا۔ میں بہت شاد اور مگن تھا کہ غبارہ ایک آواز کے ساتھ پھٹ گیا۔ میں نے پیچھے مٹر کر دیکھا، سٹرک پر قابلِ رحم انداز میں ایک پچکی ہوئی ربٹر کی لجلجی سی شے پڑی ہوئی تھی۔

اب اس عمر میں آ کر مجھے یہ سمجھ میں آ گیا ہے کہ وہ پچکی ہوئی شے دنیا تھی۔

  1. اپنی زندگی میں، میں نے جو سب سے سمجھ دار آدمی دیکھا، وہ پڑھنا لکھنا نہیں جانتا تھا۔
  2. ایسے کئی وجوہ ہیں جن کی وجہ سے آپ دنیا کے ساتھ ہم قدم نہ ہوں۔
  3. ایک آدمی کو الفاظ اس لیے نہیں دیے گیے ہیں کہ وہ اپنے خیالات کی پردہ داری کرے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]


مزید دیکھے[ترمیم]

ویکیپیڈیا میں اس مضمون کے لیے رجوع کریں حوزے سارا ماگو.